پیر کو دنیا بھر میں فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ سمیت بڑی سوشل میڈیا سروسز کی اچانک بندش پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے فیس بک کے نائب صدر انفراسٹرکچر سنتوش جناردھن نے کہا کہ ڈیٹا سینٹرز کے درمیان نیٹ ورک ٹریفک کو مربوط کرنے والے ریڑھ کی ہڈی کے راؤٹرز پر تشکیل میں تبدیلیاں ایسے مسائل کا سبب بنیں جس سے مواصلات میں خلل پڑا۔

ایک بلاگ پوسٹ میں سنتوش جناردھن نے کہا کہ نیٹ ورک ٹریفک میں اس خلل نے ہمارے ڈیٹا مراکز کے بات چیت کے طریقے پر وسیع اثر ڈالا جس سے ہماری خدمات رک گئیں۔

جناردھن نے کہا کہ ہمیں اپنے پلیٹ فارموں پر آج کی بندش کی وجہ سے ہونے والی تکلیف پر افسوس ہے، انہوں نے کہا کہ وہ رسائی بحال کرنے کے لئے زیادہ سے زیادہ محنت کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان کا نظام اب واپس آ چکا ہے اور چل رہا ہے۔اس بندش کی بنیادی وجہ نے بہت سے اندرونی آلات اور نظام کو بھی متاثر کیا جو ہم اپنے روزمرہ کے کاموں میں استعمال کرتے ہیں، جس سے مسئلے کی فوری تشخیص اور حل کی ہماری کوششوں میں پیچیدگی پیدا ہوئی

جناردھن نے مزید کہا کہ ہم متاثرہ تمام افراد سے معذرت خواہ ہیں اور آج جو کچھ ہوا اس کے بارے میں مزید سمجھنے کے لیے کام کر رہے ہیں تاکہ ہم اپنے بنیادی ڈھانچے کو مزید لچکدار بنانا جاری رکھ سکیں۔

%d bloggers like this: