وزیراعظم عمران خان روسی صدر ولادی میر پیوٹن کی خصوصی دعوت پر بدھ (22 فروری) سے روس کا دو روزہ سرکاری دورہ کریں گے۔

وزیراعظم کے ہمراہ کابینہ کے ارکان سمیت اعلیٰ سطح کا وفد بھی ہوگا۔

پاکستان اور روس کے درمیان دوستانہ تعلقات ہیں جن کی نشاندہی باہمی احترام، اعتماد اور بین الاقوامی اور علاقائی مسائل پر نظریات کے یکسانیت پر مبنی ہے۔

سربراہی اجلاس کے دوران دونوں رہنما توانائی تعاون سمیت دوطرفہ تعلقات کی تمام صفوں کا جائزہ لیں گے۔

وہ اسلام فوبیا اور افغانستان کی صورتحال سمیت اہم علاقائی اور بین الاقوامی مسائل پر بھی وسیع پیمانے پر تبادلہ خیال کریں گے۔

وزیراعظم کا دورہ پاکستان اور روس کے کثیر الجہتی دوطرفہ تعلقات کو مزید گہرا کرنے اور مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کو بڑھانے میں معاون ثابت ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: