قوم آج یوم پاکستان ملک کی ترقی، خوشحالی اور مضبوط دفاع کو یقینی بنانے کے عزم کے ساتھ منا رہی ہے۔

یہ دن 23 مارچ 1940 کو تاریخی قرارداد لاہور کی منظوری کی یاد میں منایا جاتا ہے، جس کے تحت برصغیر کے مسلمانوں نے اپنے لیے علیحدہ وطن کا ایجنڈا طے کیا۔

دن کا آغاز اسلام آباد میں 31 توپوں کی سلامی اور صوبائی دارالحکومتوں (کراچی، لاہور، کوئٹہ اور پشاور) میں 21 توپوں کی سلامی سے ہوا۔ لاہور میں علامہ اقبال کے مزار پر گارڈز کی تبدیلی کی پروقار تقریب ہوئی۔ مساجد میں نماز فجر کے بعد ملکی ترقی و خوشحالی کے لیے خصوصی دعائیں کی گئیں۔

کراچی میں بھی مزار قائد پر گارڈز کی تبدیلی کی پروقار تقریب ہوئی۔

اس دن کی اہم خصوصیت آج اسلام آباد میں عظیم الشان فوجی پریڈ ہے جس میں تینوں مسلح افواج اور دیگر سیکیورٹی فورسز کے دستے مارچ پاسٹ کر رہے ہیں جبکہ لڑاکا طیارے فضائی مشقیں کر رہے ہیں۔

مختلف صوبوں کی ثقافت کے مختلف پہلوؤں کی عکاسی کرنے والے مختلف فلوٹس کا مارچ بھی پریڈ کا حصہ ہے۔

آج پریڈ میں پچیس جے 10 طیاروں کے خصوصی دستے نے بھی فلائی پاسٹ کیا۔

وزیراعظم عمران خان، صدر عارف علوی، تینوں مسلح افواج کے سربراہان اور وفاقی وزراء بھی نمائش میں موجود ہیں۔

اسلامی تعاون تنظیم کے وزرائے خارجہ کی کونسل کے 48ویں اجلاس میں شریک معززین بھی بطور مہمان خصوصی یوم پاکستان پریڈ کا مشاہدہ کر رہے ہیں۔

صدر مملکت عارف علوی نے ٹوئٹر پر قوم کو مبارکباد دی۔

یوم پاکستان برصغیر کی تاریخ میں کئی حوالوں سے ایک تاریخی دن ہے۔ مسلمانوں کے لیے علیحدہ وطن کا مطالبہ وقت کے ساتھ سیاسی طور پر درست ثابت ہوا ہے،‘‘ صدر نے کہا۔

صدر مملکت نے کہا کہ وہ دن دور نہیں جب پاکستان معاشی طور پر مضبوط اور خوشحال ملک بن جائے گا۔ قوم کو متحد ہو کر اتحاد کے لیے کام کرنے کی ضرورت ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: