سابق وزیراعظم عمران خان کی کال پر پی ٹی آئی کارکنان نے احتجاج کیا۔

پی ٹی آئی کے ہزاروں کارکنوں نے اپنے قائد عمران خان کی برطرفی کے خلاف کراچی اور لاہور میں احتجاجی مظاہرے کیے ہیں۔

عوامی لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے راولپنڈی میں لال حویل کی رہائش گاہ کے باہر اسی طرح کے احتجاج کی قیادت کی۔

دریں اثناء مسلم لیگ ن کے کارکنان پنجاب کے مختلف شہروں میں بھنگڑے ڈانس کے ساتھ برطرفی کا جشن منا رہے ہیں۔

کراچی میں ملینیم مال کے باہر ہونے والے مظاہرے میں خواتین کی بڑی تعداد شامل تھی۔

انہوں نے اپوزیشن لیڈروں کے خلاف نعرے لگائے اور کہا کہ امریکہ کے اتحادی غدار ہیں۔

اسی طرح لاہور کے لبرٹی چوک پر خواتین سمیت بڑی تعداد میں لوگ جمع ہوئے۔

احتجاجی مظاہرے سے اسد عمر اور عثمان بزدار نے خطاب کرنا تھا۔

اسلام آباد کے ایف نائن پارک میں پی ٹی آئی کے حامیوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ ان پر امپورٹڈ گورنمنٹ قبول نہیں کے نعرے درج تھے۔

راولپنڈی میں شیخ رشید نے اپنی لال حویلی کی بالکونی سے احتجاج سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ عمران خان کی قیادت میں احتجاج کی کال دینا چاہتے ہیں۔

شیخ رشید نے یہ بھی کہا کہ جو شخص عدالتی مقدمات کا سامنا کر رہا تھا اور پیر کو فرد جرم عائد ہونے والی تھی وہ اب وزیراعظم بنے گا۔

سابق وزیر داخلہ نے دعویٰ کیا کہ ن لیگ نے شہباز شریف کو فرد جرم سے بچنے میں مدد کے لیے حکومتی فائلیں بدل دیں۔ انہوں نے کہا کہ میں اسٹیبلشمنٹ کو بتانا چاہتا ہوں کہ شریفوں نے فائلیں بدل دی ہیں۔

شیخ رشید نے فوج سے مداخلت کرکے 90 دن میں عام انتخابات کرانے کا بھی مطالبہ کیا۔ بصورت دیگر، انہوں نے کہا کہ خانہ جنگی ہو گی۔

دیگر شہروں میں بھی احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: