جمعہ کی شام بلوچستان کے کئی علاقوں میں 5.2 شدت کے زلزلے کے جھٹکوں کے بعد کم از کم 80 مکانات منہدم اور 250 دیگر دراڑیں چھوڑ گئے۔ بلوچستان میں چند گھنٹوں میں یہ دوسرا زلزلہ تھا۔

نیشنل سیسمک مانیٹرنگ سینٹر (این ایس ایم سی) نے جمعہ کو بلوچستان میں دو زلزلوں کی اطلاع دی۔

پہلا جھٹکا جمعہ کی صبح 12:48 پر دالبندین سے 56 کلومیٹر جنوب میں تھا۔ ریکٹر اسکیل پر اس کی شدت 5.1 ریکارڈ کی گئی۔

5.2 شدت کا دوسرا زلزلہ صبح 6 بج کر 21 منٹ پر آیا اور اس کا مرکز بیلہ سے 80 کلومیٹر شمال میں تھا۔

ضلع خضدار کے کئی علاقوں میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔

سماء ٹی وی نے لیویز حکام کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ کم از کم 80 مکانات منہدم ہوئے جبکہ 250 دیگر میں دراڑیں پڑ گئیں۔

خضدار کے ڈپٹی کمشنر میجر (ر) محمد الیاس کبزئی نے بتایا کہ زلزلے سے نالی، زمری، برنگ، اورناچ اور کان سونارو گاؤں متاثر ہوئے۔

انہوں نے ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ چونکہ گاؤں دور دراز علاقوں میں واقع تھے، اس لیے امدادی کارکنوں کو ان تک پہنچنے میں وقت لگا۔

حکام نے متاثرہ علاقوں میں راشن، ادویات، خیمے اور کمبل روانہ کر دیے ہیں۔

%d bloggers like this: