نیپرا نے بجلی کے نرخوں میں 3 روپے 99 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی۔

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے منگل کو اپریل 2022 کے لیے فیول لاگت ایڈجسٹمنٹ (ایف سی اے) کی مد میں بجلی کے نرخوں میں 3 روپے 99 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی۔

نیپرا نے سنٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی سی پی اے) کی جانب سے فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز کے تحت بجلی کے ٹیرف میں 4.5 روپے فی یونٹ اضافے کی درخواست سے متعلق معاملے کی سماعت پہلے ہی مکمل کر لی ہے قیمتیں).

بجلی کے صارفین پر تقریباً 51 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔

اضافے کا اطلاق کے الیکٹرک کے صارفین پر نہیں ہوگا۔

یہ فیصلہ 26 مئی کو حکومت کی جانب سے بین الاقوامی مالیاتی فنڈز (آئی ایم ایف) کی بیل آؤٹ شرائط کو پورا کرنے کے لیے پیٹرول کی قیمت میں 30 روپے فی لیٹر اضافے کے اعلان کے بعد سامنے آیا ہے، کیونکہ ملک قرض کے پروگرام میں ایک سال کی توسیع چاہتا ہے اور چاہتا ہے۔ اسے 2 بلین ڈالر تک بڑھانا۔

اس دوران پاکستان میں بجلی کا شارٹ فال شدت اختیار کر گیا کیونکہ بجلی کا بحران 7000 میگاواٹ تک پہنچ گیا۔ ملک میں بجلی کی پیداوار 21,200 میگاواٹ ہے جبکہ طلب 28,200 میگاواٹ ریکارڈ کی گئی ہے۔

ملک کے تمام بڑے شہروں کو شدید گرمی میں گھنٹوں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا سامنا ہے۔

خبر کا ذریعہ (جی این این نیوز)

%d bloggers like this: